یہودی آباد کاروں کے قبلہ اول پر دھاوے، تین فلسطینی نمازی گرفتار

یہودی آباد کاروں کے قبلہ اول پر دھاوے، تین فلسطینی نمازی گرفتار

کل اتوار کے روز یہودی آباد کاروں کی بڑی تعداد نے مسجد اقصیٰ میں گھس کر مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ ادھر گذشتہ روز قابض فوج نے مسجد اقصیٰ میں نماز کی ادائی کے لیے آنے والے تین فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا۔
مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق قابض فوج نے مسجد اقصیٰ میں گھس کر مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ اس موقعے پر فلسطینی محکمہ اوقاف کے تین ملازمین کو حراست میں لے لیا گیا۔
بیت المقدس کے مقامی ذرائع نے بتایا کہ قابض فوج نے مسجد اقصیٰ کے محافظ لوئی ابو السعد کو قبۃ الصخرہ میں اس کا محاصرہ کرنے کے بعد گرفتار کیا۔ اس کے علاوہ صفائی کے عملےکے رکن خلیل الترھونی اور مسجد اقصیٰ میں صفائی کےشعبے کے انچارج رائد زغیر کو گرفتار کیا گیا۔ ان تینوں کو بیت المقدس میں القشلہ حراستی مرکز منتقل کردیا گیا۔
خیال رہے کہ قابض فوج نے کل اتوار کے روز مسجد اقصٰی اور محکمہ اوقاف کے ڈپٹی ڈائریکٹر کی جبل المکبر کے مقام پر موجود رہائش گاہ پر چھاپہ مارا اور ان کے گھر میں گھس کر مقدس مقام کی میں توڑپھوڑ کی گئی۔
حالیہ ہفتوں کے دوران قابض فوج کی طرف سے مسجد اقصیٰ، القدس شہر اور فلسطین کے دوسرے علاقوں میں فلسطینیوں کی گرفتاریوں اور القدس میں فلسطینی محکمہ اوقاف کے عملے کی گرفتاریوں کے واقعات میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔


آپ کی رائے

Leave a Reply

Your email address will not be published.

مزید دیکهیں