بھارتی مسلمانوں کیخلاف متحرک انتہاپسندوں کو حکومتی سرپرستی حاصل ہے، امریکی اخبار

بھارتی مسلمانوں کیخلاف متحرک انتہاپسندوں کو حکومتی سرپرستی حاصل ہے، امریکی اخبار

بھارتی انتہا پسندوں کی جانب سے مسلمانوں کو قتل کرنےکی کھلے عام دھمکیوں پر مودی سرکار کی خاموشی کو امریکی اخبار نے ہدفِ تنقید بنایا ہے۔
نیویارک ٹائمز نے لکھا ہےکہ گذشتہ دنوں انتہا پسند ہندو جماعتوں کے رہنماؤں کی جانب سے مسلمانوں کو قتل کرنےکی کھلے عام دھمکیاں دی گئیں تاہم اس پر مودی سرکار کی جانب سے کوئی ایکشن نہیں ہوا۔
امریکی اخبار کا کہنا ہےکہ مودی اور بی جے پی کے اکثر رہنماؤں کے انتہا پسند جماعتوں سے قریبی تعلقات ہیں اور ایسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے بعض افراد بی جے پی کا بھی حصہ ہیں۔
نیویارک ٹائمز کے مطابق مودی سمیت دیگر سیاسی رہنماؤں کی خاموشی اور بے حسی اس بات کا ثبوت ہےکہ مسلمانوں کے خلاف متحرک جماعتوں کو حکومتی سرپرستی حاصل ہے۔
اخبار نےکرسمس پر ہندو انتہا پسندوں کے ہاتھوں آگرہ میں سانتا کلاز کا مجسمہ نذرِ آتِش کرنے پر بھارتی حکمرانوں کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے،مریکی اخبار نے لکھاکہ موت کے خوف سے بھارتی عیسائیوں نے خود کو ہندو کہلوانا شروع کردیا ہے


آپ کی رائے

Leave a Reply

Your email address will not be published.

مزید دیکهیں