مقبوضہ کشمیر، میرواعظ کو ایک بار پھر بھارتی فورسز نے نماز جمعہ کی امامت سے روک دیا

مقبوضہ کشمیر، میرواعظ کو ایک بار پھر بھارتی فورسز نے نماز جمعہ کی امامت سے روک دیا
mirwaiz_umar_farooqکراچی (رپورٹ: جنگ نیوز) کل جماعتی حریت کانفرنس جموں و کشمیر کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق کو بھارتی فورسز نے بارہویں بار سری نگر کی جامع مسجد میں نماز جمعہ پڑھانے سے جبراً روک دیا ہے۔

حریت ترجمان نے جمعہ کو سری نگرسے ٹیلیفون پر ”جنگ“ کو بتایا کہ میر واعظ کو ان کی نظر بندی کے احکامات جمعرات کو دیئے گئے تھے، جنہیں انہوں نے وصول کرنے سے انکار کردیا ۔ تاہم جمعہ کو جب وہ 12بجے دوپہر جامع مسجد جانے کے لئے اپنے گھر سے نکلے تو سی آر پی ایف اور کشمیر پولیس نے میر واعظ کو جبراً گھر میں دھکیل دیا ۔
میرواعظ نے ”جنگ“ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا مجھے ہلاک کرنے کیلئے دہلی سے براہ راست حکم نامے آرہے ہیں ۔ مجھ پر چندی گڑھ، دہلی، کول کتہ میں قاتلانہ حملے ہوچکے ہیں۔
انہوں نے کہا کشمیر مسلم اکثریتی علاقہ ہے لیکن یہاں مسلمانوں کو ان کے مذہبی فرائض کی ادائیگی سے روکا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم بھارت سرکار اور عمر عبداللہ کے اس جارحانہ رویّے پر سخت افسوس ہے۔

آپ کی رائے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

مزید دیکهیں